پی ڈی ایم کی پہلے حیثیت تھی اور نہ اب ہے۔۔ بس میڈیا اور میڈیا میں بیٹھے اسکے ایجنٹوں جیسے حامد میر وغیرہ نے ویسے ہی اسمیں زبردستی ہوا بھرنے کی کوشش کی تھی جس سے اور تو کچھ نہیں ہوا لیکن مولانا کا پیٹ پھول گیا۔۔۔

اور یہ بات میں مولانا کے دھرنے کے وقت بھی کی تھی کہ حامد میر ویسے ہی اسمیں ہوا ڈال رہا تھا۔۔۔

اور شائد ہی ڈی۔ایم پہ یہ میری آخری پوسٹ ہو۔ ان پہ وقت ضائع کرنے کی ضرورت نہیں۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں