این اے 75 کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ ن کی امیدوار نوشین افتخار نے چیف الیکشن کمشنر کو خط لکھ دیا۔ جس میں کہا ہے کہ یو سی جڑانوالہ کے چند پولنگ اسٹیشنوں کے پریذائیڈنگ افسران کی ساکھ پر خدشات ہیں۔نوشین افتخار نے چیف الیکشن کمشنر کو لکھے گئے خط میں کہا ہے کہ یہ پریزائیڈنگ افسران فارم 45 میں ردو بدل کر سکتے ہیں، اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے خصوصی طریقہ کار بنایا جائے۔ ان افسران پر دھاندلی کی روک تھام کے لیئے سخت نگرانی کی جائے۔نوشین افتخار نے گورنمنٹ ڈگری کالج پولنگ اسٹیشن کا دورہ کیا اور کہا کہ ان کے ساتھ ڈی ایس پی نے بدتمیزی سے بات کی ہے انہوں نے ڈی پی او پولیس سے واقع کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ

آج حلقے میں موجود انتظامیہ کے لوگ یہ سوچیں کہ وہ پی ٹی آئی کے ملازم یا نمائندے نہیں بلکہ وہ لوگوں کو ان کا حق دلانے کے لیے آئے ہیں۔ لیگی امیدوار نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ یہ مسلم لیگ ن کی سیٹ تھی، ہے اور رہے گی۔این اے 75 کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ ن کی امیدوار نوشین افتخار نے چیف الیکشن کمشنر کو خط لکھ دیا۔ جس میں کہا ہے کہ یو سی جڑانوالہ کے چند پولنگ اسٹیشنوں کے پریذائیڈنگ افسران کی ساکھ پر خدشات ہیں۔نوشین افتخار نے چیف الیکشن کمشنر کو لکھے گئے خط میں کہا ہے کہ یہ پریزائیڈنگ افسران فارم 45 میں ردو بدل کر سکتے ہیں، اس صورتحال سے نمٹنے کے لیے خصوصی طریقہ کار بنایا جائے۔ ان افسران پر دھاندلی کی روک تھام کے لیئے سخت نگرانی کی جائے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں