حضور نبی کریم ﷺ کا پسینہ مبارک

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ روایت کرتے ہیں ایک شخص رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم کی خدمت میں آیااورعرض کیا کہ یا رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم !میں نے اپنی بیٹی کا نکاح کردیا ہے، میں اسے اس کے خاوند کے گھر بھیجناچاہتا ہوں میرے پاس کوئی خوشبو نہیں آپ کچھ عنایت فرمائیں۔

سرکار صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم نے فرمایا: میرے پاس موجود نہیں مگرکل صبح ایک چوڑے منہ والی شیشی اور کسی درخت کی لکڑی میرے پاس لے آنا۔ دوسرے روز وہ شخص شیشی اور لکڑی لیکر حاضر خدمت ہوا۔ آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم نے اپنے دونوں بازوؤں سے اس میں اپنا پسینہ مبارک ڈالناشروع کیا یہاں تک کہ وہ بھر گئی پھرفرمایاکہ اسے لے جا کر اپنی بیٹی سے کہہ دینا کہ اس لکڑی کو شیشی میں ترکرکے مل لیا کرے۔پس جب وہ آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ واٰلہٖ وسلم کے پسینہ مبارک کو لگاتی تو تمام اہل مدینہ کواس کی خوشبوپہنچتی یہاں تک کہ اس کے گھر کا نام ’’ بیتُ الْمُطیبِین‘‘ (یعنی خوشبو والوں کا گھر) ہو گیا۔

(شواہد النبوۃ،رکن خامس،ص۱۸۱)

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں