بیجنگ(این این آئی) چینی وزارتِ خارجہ کے ترجمان چا لی جیان نے جاپان کی جانب سے لاکھوں ٹن تابکار آلودہ پانی کی سمندر بردگی پر شدید تنقید کرتےہوئے کہا ہےکہ اس خطرناک عمل کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔میڈیارپورٹس کے مطابق گزشتہ روز چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے فوکوشیما جوہری بجلی گھر سے گندے تابکار پانی کے سمندر میں اخراج سے متعلق ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ جاپانی میڈیا کے اپنے اندازوں کے مطابق، جاپان اگلے تیس برسوں میں تابکار فاضل پانی کے دس لاکھ ٹن کو سمندر

میں خارج کرے گا۔ اس خطرناک عمل کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی۔چاو لی جیان نے زور دیا کہ نہ تو سمندر جاپان کا کچرے دان ہے اور نہ ہی بحرالکاہل جاپان کا گٹر ہے۔ جاپان کو ایٹمی فاضل پانی سے نمٹنے کیلیےپوری دنیا کو خطرے سے دوچار نہیں کرنا چاہیے۔ایک اور خبر کے مطابق، گزشتہ روز جنوبی کوریا میں ایوان صدر کے ترجمان نے کہا کہ جنوبی کوریا کے صدر مون جے این نے اسی دن جنوبی کوریا میں متعین جاپان کے سفیر کو جاپان کے جوہری فاضل پانی کےسمندر میں اخراج پر تشویش سے آگاہ کیا۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں