اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک /این این آئی )پاکستان میں سی پیک منصوبے کے تحت بننے والی موٹروے کا ایک اور منصوبہ تکمیل کے آخری مراحل میں داخل ہوچکا ہے ۔ذرائع نےکہا ہے کہ 292 کلومیٹر طویل ڈی آئی خان اسلام آباد موٹروے کو رواں سال اگست میں آپریشنل کیے جانے کا قوی امکان ہے ۔ منصوبے کے تحت بننے والی موٹرو ے دو صوبوں پنجاب اور کے پی کے پسماندہ علاقوں سے گزرے گی ۔دوسری جانب اسلام آباد: ملک بھر میں سڑکیں اور قومی شاہراہوں کا جالبچھانے کی تیاری شروع کردی گئی، وفاقی حکومت نے اربوں کی لاگت سے جاری منصوبوں پر کام تیز کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق ماضی کی حکومتوں کے مقابلے میں 3 گنا زائد قومی شاہراہوں کی منظوری دے دی گئی جس کے بعد سڑکوں کا جال بچھایا جارہا ہے۔ سی پیک کے مغربی رووٹ کی اہم ترین شاہراہوں پر بھی کام کی رفتار بڑھا دی گئی ہے۔ اس حوالے سے ایک ویڈیو بھی جاری کی گئی ہے۔ وزارت مواصلات مراد سعید نے تازہ اعداد وشمار اور نئے منصوبوں کے آغاز کی ویڈیو جاری کی جس میں ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ 2 حکومتوں کے مقابلے میں 3گنا زائد سڑکوں اور موٹرویز کی منظوری دی گئی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ماضی کے 7سال کے مقابلے میں 2047 کلو میٹر طویل سڑکیں بنائی گئیں، موجودہ حکومت نے 6ہزارکلومیٹر سے زیادہ سڑکوں کی منظوری دی ہے، متعدد منصوبوں پر کام کا آغاز ہو چکا ہے،12 منصوبوں پرکام 3 ماہ میں شروع ہوگا، بلوچستان میں بھی 3083 کلومیٹر سڑکوں کی تعمیر کا آغاز ہوگیا ہے۔ وزیر کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے56 ارب روپے لاگت سےخضدار بسمہ اور ایم 8 منصوبوں کاافتتاح کیا تھا،

شاہراہوں اور موٹرویز کی سی پیک میں شمولیت سےمغربی روٹ مکمل ہوجائےگا مغربی روٹ میں شمولیت اورتکمیل سے ان علاقوں میں خوشحالی اورترقی کاآغاز ہوگا، چین کی حکومت کے تعاون اورمنصوبوں میں دلچسپی لینے پرشکر گزار ہے۔ مراد سعید نے کہا مکمل ڈیٹا دینے کو تیار ہوں کہ ہم کہاں پر کتنی طویل شاہراہیں بنا رہےہیں، آئندہ ماہ کوئٹہ بائی پاس اور ڈیرہ مراد جمالی کے منصوبے پربھی کام کاآغازہوجائےگا، درہ آدم خیل سڑک کا منصوبہ آئندہ ماہ کے پہلے ہفتے میں مکمل ہو جائے گا، آئندہ ماہ ملتان سے لودھراں سڑک کا بھی آغاز ہو جائے گا۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں