کیف (این این آئی)یوکرین نے روسی فوج کے ساتھ مل کر محصور بندرگاہ شہر ماریوپول سے شہریوں کے انخلا کے لیے ایک محفوظ راستہ کھولنے پراتفاق کیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق یوکرین کی نائب وزیراعظم ایرینا ویرشچک نے بدھ کو ٹیلی گرام پر لکھا کہ ماریوپول میںتباہ کن انسانی صورت حال کو مدنظر رکھتے ہوئے ہم اس سمت میں اپنی کوششوں پر توجہ مرکوز کریں گے اورہم خواتین، بچوں اورضعیف العمر افراد کے لیے انسانی راہداری پرابتدائی معاہدہ طے کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔یوکرین کے روسی فوج کی بمباری کی زد میں آنے والے علاقوں سے شہریوں کا انخلا گذشتہ تین روز سے معطل تھا کیونکہ کیف حکومت نے کہا تھا کہ روس کی جانب سے حملوں میں تیزی لانے کے بعد کوئی معاہدہ نہیں ہو سکا ہے۔

ساحلی شہر ماریوپول یوکرین پر روس کے تباہ کن حملے کا ایک اہم ہدف ہے اور وسیع پیمانے پر گولہ باری سے شہر کے مختلف حصے تباہ ہوچکے ہیں۔ماریوپول کے میئرنے باقی مکینوں سے تباہ حال شہر چھوڑنے کی اپیل کی ۔ میئرواڈیم بوائیچینکو نے ٹیلی گرام پر ایک بیان میں کہاکہ خوفزدہ نہ ہوں اور زپوریژیا منتقل ہوجائیں جہاں آپ کوتمام ضروری امداد ملے گی۔ خوراک، ادویہ، بنیادی ضروریات۔ لیکن بنیادی بات یہ کہ آپ وہاں محفوظ رہیں گے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں