سری نگر،لاہور ( آن لائن، این این آئی )بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے مقبوضہ کشمیر کے ضلع سامبا پہنچنے سے قبل وادی میں دھماکا ہوا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق آرٹیکل 370 کے خاتمے کے بعد نریندر مودی کا مقبوضہ وادی کا یہ پہلا دورہ ہے۔ مطابق نریندر مودی کے دورے سے کچھ دیر قبل جموں میں دھماکا بھی ہوا، دھماکا مودی کے ریلی کےمقام سے 12 کلومیٹر دور ہوا۔ادھر بھارتی وزیراعظم کے دورے کے موقع پرمقبوضہ کشمیرمیں مکمل ہڑتال ہے جبکہ قابض انتظامیہ نے وادی کو فوجی چھاؤنی میں تبدیل کر رکھا ہے۔

نریندر مودی کی آمد کے باعث مقبوضہ وادی میں بھارتی فوجیوں، پولیس اہلکاروں کی بڑی تعداد تعینات ہے جبکہ نقل و حرکت پر نظر رکھنے کے لیے خصوصی کیمروں کا استعمال بھی کیا جا رہا ہے ، دوسری جانب حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ اور چیئرمین پیس اینڈ کلچر مشعال ملک نے کہاہے کہ مودی کشمیریوں کا قاتل ہے، مودی کے دورہ مقبوضہ کشمیر پر کشمیری یوم سیاہ منا رہے ہیں، آزادی کشمیر کے لیے جدوجہد جاری رہے گی۔

بھارتی وزیراعظم نریدر مودی کے دورہ سرینگر کے موقع پر چیرمین پیس اینڈ کلچر مشعال ملک نے اپنے پیغام میں کہا کہ مودی کے دورہ پر کشمیری احتجاجا یوم سیاہ منا رہے ہیں۔ مشعال ملک نے کہا کہ مودی کشمیریوں کا قاتل ہے، مودی کے دورے موقع پر ہزاروں آرمی اہلکار اور سنائپ شوٹر تعینات کیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں جیل کا سماں ہے لیکن بھارتی مظالم کے باوجود ہم اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں۔ مشعال ملک نے کہا کہ سرینگر میں شارپ شوٹر، پولیس اور سی سی ٹی وی کیمرے لگائے گئے ہیں جبکہ کشمیریوں کی گرفتاریاں بھی کی جارہی ہیں۔چیئرمین پیس اینڈ کلچر کا مزید کہنا تھا کہ آرٹیکل 73 کا خاتمہ کرکے کشمیریوں سے انکا حق چھینا گیا ، کشمیری مودی قاتل کو اپنی سرزمین پر برداشت نہیں کریں گے۔ مشعال ملک کا کہنا تھا کہ دنیا کو بھارتی مظالم کا نوٹس لینا چاہیے اور اقوام عالم کو کشمیریوں کی آواز سننی چاہیے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں