لاہور (ویب ڈیسک) کالعدم تحریک لبیک اور پنجاب حکومت میں مذاکرات کی کہانی سامنے آ گئی ہے۔نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ میں گذشتہ روز پنجاب حکومت اور کالعدم تحریک لبیک کے مابین ہونے والے مذاکرات کے حوالے سے اہم تفصیلات سامنے آئی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور کی سربراہی میں حکومتی وفدنے ٹی ایل پی وفد سے بابو صابو کے قریب ملاقات کی۔پولیس اہلکاروں کی رہائی کے بدلے کالعدم تحریک کے دو سے زائد قائدین کو رہا کیا گیا۔کالعدم تحریک لبیک کے وفد کی جانب سے ایک بار پھر سفیر کی ملک بدری کا مطالبہ پیش کیا گیا۔۔جبکہ پارلیمنٹ میں قرارداد پیش کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا،ٹی ایل پی کی جانب سے سعد رضوی کی رہائی کا بھی مطالبہ پیش کیا گیا۔مقدمے کے خاتمے اور کارکنوں کی رہائی کے مطالبات بھی پیش کیے گئے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں