وزیر احسن اقبال کی جانب سے مراد سعید کے خلاف دائر ہتک عزت کے مقدمے میں پیش رفت

وفاقی وزیر احسن اقبال کی جانب سے سابق وفاقی وزیر مراد سعید کے خلاف دائر ہتک عزت کے مقدمے میں پیش رفت ہوئی ہے۔ اسلام آباد کی ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن عدالت میں مراد سعید کی مسلسل غیر حاضری اور وکیل کی عدم پیشی کے باعث عدالت نے یکطرفہ طور پر کارروائی کا فیصلہ کیا ہے۔

 

ایڈیشنل جج حسینہ ثقلین نے کیس کی سماعت کی، احسن اقبال اپنے وکیل قیصر امام کے ہمراہ عدالت میں پیش ہوئے۔ احسن اقبال نے اپنا بیان ریکارڈ کراتے ہوئے مؤقف اختیار کیا کہ مراد سعید کی جھوٹی مہم سے ان کی ساکھ کو نقصان پہنچا۔ انہوں نے خاص طور پر مراد سعید کی جانب سے 2019 میں لگائے گئے ایک الزام کا ذکر کیا، جس میں ملتان سکھر موٹر وے منصوبے میں کرپشن کا الزام لگایا گیا اور یہ دعویٰ کیا گیا کہ احسن اقبال نے 20 لاکھ روپے رشوت لی تھی۔ 70 ارب۔

 

احسن اقبال نے کروڑوں روپے مانگ لیے۔ مراد سعید سے 10 ارب روپے معاوضہ، غیر مشروط معافی کے ساتھ۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر تین گواہوں کو بیان ریکارڈ کرانے کے لیے طلب کرتے ہوئے سماعت 23 مئی تک ملتوی کر دی۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں