وفاقی حکومت نے سوشل میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام کے لیے مشاورت شروع

 

وفاقی حکومت نے سوشل میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی کے قیام کے لیے مشاورت شروع کر دی ہے۔ مجوزہ سوشل میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی (PICA) ترمیمی بل 2024 پارلیمنٹ میں پیش کیا جائے گا۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ کابینہ کی قانونی اصلاحات کمیٹی کی جانب سے مجوزہ ترمیم پر مشاورت کے لیے اسٹیک ہولڈرز کو مدعو کیا گیا ہے۔ اس میں میڈیا ہاؤسز اور دیگر متعلقہ فریق شامل ہیں۔

 

وزیراعظم نے کابینہ کی ایک کمیٹی تشکیل دی جسے کابینہ کے حالیہ اجلاس کے دوران اس معاملے پر مشاورت کا کام سونپا گیا۔ سوشل میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی حکومت کو ڈیجیٹل حقوق کے مسائل پر سفارشات فراہم کرے گی۔

 

مجوزہ اتھارٹی کا مقصد انٹرنیٹ کے ذمہ دارانہ استعمال اور ضوابط کی پابندی کو یقینی بنانا ہے۔ یہ آن لائن مواد کے ضابطے کو حل کرے گا اور سوشل میڈیا قانون کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کے لیے طریقہ کار قائم کرے گا۔

 

مزید برآں، مشاورت گواہوں اور سوشل میڈیا قوانین کی خلاف ورزی کرنے والوں کو طلب کرنے کے عمل کا احاطہ کرے گی۔ اس بل کا مقصد شہریوں کی نجی زندگیوں کو سوشل میڈیا سے لاحق خطرات سے بچانا ہے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں