پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے سندھ اسمبلی میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) کی چیئرمین شپ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم) کو نہ دینے کا فیصلہ

 

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) نے سندھ اسمبلی میں پبلک اکاؤنٹس کمیٹی (پی اے سی) کی چیئرمین شپ متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (ایم کیو ایم) کو نہ دینے کا فیصلہ کیا ہے۔ نجی جریدے کی رپورٹ کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے کہ سندھ اسمبلی میں قائمہ کمیٹیوں کا معاملہ رواں ہفتے حل ہونے کی امید ہے۔

 

اس منصوبے میں صوبائی اسمبلی میں 34 محکمانہ قائمہ کمیٹیوں کا قیام شامل ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان کو 8 کمیٹیوں کی چیئرمین شپ ملنے کا امکان ہے جب کہ سنی اتحاد کونسل یا آزاد امیدوار 3 کمیٹیاں حاصل کریں گے۔ مزید برآں، جماعت اسلامی کو آزاد ارکان کی حمایت سے قائمہ کمیٹی کی چیئرمین شپ مل سکتی ہے۔ پی پی پی پی اے سی سمیت 22 قائمہ کمیٹیوں کی سربراہی کرے گی۔

 

ایم کیو ایم نے کہا ہے کہ وہ پی اے سی، تعلیم، لوکل گورنمنٹ، داخلہ اور دیگر قائمہ کمیٹیوں کو اپنا حق سمجھتے ہیں۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں