سرگودھا میں توہین مذہب کے واقعے میں ملوث افراد کو گرفتار

 

سرگودھا میں توہین مذہب کے واقعے میں ملوث افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ مجاہد کالونی میں مشتعل ہجوم نے توہین مذہب کا الزام لگاتے ہوئے ایک شخص کے گھر میں گھس کر اسے شدید مار پیٹ اور توڑ پھوڑ کا نشانہ بنایا۔ ہجوم نے ان کے گھر میں قائم جوتوں کی فیکٹری کو بھی آگ لگا دی اور بجلی کی تنصیبات کو بھی نقصان پہنچایا۔

 

پولیس نے سادہ لباس اہلکاروں کے ساتھ مل کر زخمی شخص کو ایمبولینس کے ذریعے اسپتال منتقل کیا۔ علاقے میں ڈی پی او خوشاب، آر پی او شارق کمال صدیقی اور امن کمیٹی کے ارکان سمیت پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے۔

 

آر پی او شارق کمال صدیقی نے بتایا کہ واقعہ کی تحقیقات جاری ہیں اور یقین دلایا کہ امن و امان خراب کرنے کے ذمہ داروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی نوٹ کیا کہ جب پولیس زخمی شخص کو نکال رہی تھی تو انہیں مشتعل ہجوم کی طرف سے پتھراؤ کا سامنا کرنا پڑا لیکن وہ بھیڑ کو منتشر کرنے اور تشدد میں ملوث افراد کو گرفتار کرنے میں کامیاب رہے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں