پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان رؤف حسن نے کہا ہے کہ ہم سمجھتے ہیں جب سے قاضی فائز عیسیٰ چیف جسٹس بنے ہیں ہمیں انصاف نہیں مل رہا۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما رؤف حسن نے کہا کہ پہلے انصاف نہیں ملتا تھا لیکن اب ہماری درخواست نظر نہیں آرہی۔ اندر مت بیٹھو

رؤف حسن نے کہا کہ چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کو خود ہمارے مقدمات سے الگ ہو جانا چاہیے تھا، وہ سمجھتے ہیں کہ ججز کا کسی بھی وجہ سے بنچوں سے الگ ہونا اچھی روایت نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ بدقسمتی سے جس طرح کے فیصلے ہو رہے ہیں وہ جانبداری کا مظاہرہ کر رہے ہیں، مقدمات میں جانبداری ہمارے مطالبے کو تقویت دیتی ہے۔

ترجمان پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ عدت کیس میں جج سے پہلے خود کو کیس سے الگ کرنے کی درخواست کی گئی، جج نے عدت کیس سے الگ ہونے سے انکار کردیا، جج اسی دن الگ ہوگئے جب عدت کیس کا فیصلہ ہونا تھا۔ ہمیں معلوم تھا کہ عدت کیس کا فیصلہ میرٹ پر کیسے ہونا ہے۔

رؤف حسن نے کہا کہ اصولی طور پر عدالت کا کندھا سیاسی معاملات میں استعمال نہیں ہونا چاہیے، عدالت کو بھی اپنے آپ کو استعمال کرنے کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ انہیں ٹویٹ کے حوالے سے ایف آئی اے کا سمن نوٹس موصول ہوا ہے، ایف آئی اے نے انہیں بدھ کی صبح 11 بجے طلب کیا ہے، کچھ سوالات کیے ہیں، ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ ویڈیو سے مختلف خدشات پیدا ہوئے ہیں۔ .

رؤف حسن نے کہا کہ پارٹی میں ایک رائے ہے کہ ہمیں انصاف نہیں مل رہا اور نہ ملنے کا امکان ہے، پارٹی میں ایک رائے ہے کہ ہمیں اپنا مقدمہ پیش کرنے کے لیے ہر فورم استعمال کرنا چاہیے، ہمارے پاس سب سے مضبوط پلیٹ فارم ہے۔ اس وقت سوشل میڈیا ہے۔ .

ترجمان تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف کے بانی نے حمودالرحمٰن کمیشن کو ترقی دینے کی ہدایت کی، عوام کو معلوم ہونا چاہیے کہ ہم سے ماضی میں کیا غلطیاں ہوئیں۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی کے بانی نے ٹویٹ پر پوسٹ کیا گیا مواد خود نہیں دیکھا، میں ٹویٹ پوسٹ ہونے کے بعد پی ٹی آئی بانی سے نہیں ملا۔

رؤف حسن نے کہا کہ پی ٹی آئی کی کور کمیٹی نے پوسٹ کی گئی ویڈیو کو ہیک کر لیا ہے، پوسٹ کی گئی ویڈیو پر پی ٹی آئی کے بانی عمران خان کی رائے اجلاس کے بعد معلوم ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ ویڈیو کا معاملہ ہماری لیگل کمیٹی کے پاس ہے، اس کا ان پٹ آج آئے گا، لیگل کمیٹی کی رائے کے بعد فیصلہ کیا جائے گا کہ ٹویٹ ڈیلیٹ کرنا ہے یا نہیں۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں