پنجاب بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن کے حوالے سے بڑی خبر آگئی

 

پنجاب کے بجٹ کی اہم خبروں میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں وفاقی ملازمین کے برابر اضافہ کیا جائے گا۔ نئے مالی سال کے بجٹ کا تخمینہ 53.7 ٹریلین روپے ہے، پنجاب کو این ایف سی ایوارڈ کے تحت وفاقی حکومت سے 3.7 ٹریلین روپے ملیں گے۔ پنجاب کے لیے ریونیو کا ہدف 1.26 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے جس میں تنخواہوں کے لیے 596 ارب اور پنشن کے لیے 445 ارب مختص کیے گئے ہیں۔

 

سروس ڈیلیوری کے اخراجات کا تخمینہ 840 ارب روپے ہے، اور ترقیاتی بجٹ 800 ارب روپے رکھنے کی تجویز ہے۔ تعلیم کے لیے 600 ارب روپے اور صحت کے لیے 406 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ مزید برآں رمضان پیکج کے لیے 30 ارب روپے، سی بی ڈی کے لیے 8 ارب، روشن گھرانہ پروگرام کے لیے 9 ارب،اپنی چھٹ اپنا گھر اقدام کے لیے 7 ارب اور گرین پاکستان انیشیٹو کے لیے 40 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔

 

دیگر مجوزہ مختص رقم میں جرنلسٹس انڈومنٹ فنڈ کے لیے 1 ارب روپے، پی آر اے کے لیے 300 ارب، بورڈ آف ریونیو کے لیے 105 ارب اور ایکسائز کے لیے 55 ارب روپے شامل ہیں۔ مزید برآں، بیرونی قرضوں کی ادائیگی کے لیے 121 ارب روپے تجویز کیے گئے ہیں، غیر صوبائی محصولات کا ہدف 555 ارب روپے ہے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں