پی ٹی آئی کا پنجاب میں شیڈو کابینہ بنانے کا امکان

 

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) چند روز میں پنجاب میں شیڈو کابینہ بنانے کا منصوبہ بنا رہی ہے۔ اس فیصلے کا مقصد سخت اپوزیشن فراہم کرتے ہوئے حکومتی وزراء کی کارکردگی کی نگرانی اور چیلنج کرنا ہے۔ شیڈو کابینہ تین سے چار اراکین صوبائی اسمبلی، دو ٹکٹ ہولڈرز اور ایک سوشل میڈیا ایکٹوسٹ پر مشتمل ہوگی۔

 

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما میاں اسلم اقبال شیڈو کابینہ کو حتمی شکل دینے کے لیے پارٹی قیادت اور اراکین اسمبلی سے مشاورت کر رہے ہیں۔ اس اقدام کا مقصد ہر سرکاری محکمے کی چھان بین کرنا ہے، کیونکہ پی ٹی آئی کا دعویٰ ہے کہ عوامی ریلیف کے حوالے سے موجودہ حکومت کی کارکردگی نہ ہونے کے برابر ہے۔

 

مزید برآں، پی ٹی آئی نے عام انتخابات میں دھاندلی کے الزام میں وائٹ پیپر جاری کر دیا۔ پارٹی کا دعویٰ ہے کہ آزادانہ اور منصفانہ انتخابات کو یقینی بنانے کے لیے ان کی کوششوں میں رکاوٹ پیدا ہوئی، جس کے نتیجے میں امیدواروں کے کاغذات مسترد ہونے، انٹرا پارٹی انتخابات کی عدم منظوری، اور انٹرنیٹ خدمات کی بندش جیسے چیلنجز کا سامنا کرنا پڑا۔ ان رکاوٹوں کے باوجود پی ٹی آئی نے انتخابات کا بائیکاٹ نہیں کیا تاہم انتخابی نتائج پر ان کا احتجاج جاری ہے۔

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں