سینیٹ کا اجلاس آج شام 5 بجے 16 نکاتی ایجنڈے کے ساتھ ہوگا۔

 

سینیٹ کا اجلاس آج شام 5 بجے شیڈول ہے جس میں 16 نکاتی ایجنڈا ہوگا۔ وفاقی حکومت نیب (قومی احتساب بیورو) اور الیکشن ایکٹ آرڈیننس میں ترامیم پیش کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

 

ایجنڈے کے اہم نکات:

 

  1. نیب اور الیکشن ایکٹ میں ترامیم: وفاقی حکومت ان ترامیم کو اجلاس کے دوران پیش کرے گی۔
  2. بل پیش کرنا: وزیر اعظم نذیر تارڑ قومی اسمبلی سے پہلے ہی منظور شدہ چار بل پیش کریں گے۔
  3. دیگر قانون سازی کا کاروبار:

پاکستان براڈ کاسٹنگ بل

پاکستان نیشنل شپنگ کارپوریشن بل

پاکستان پوسٹل سروسز مینجمنٹ بورڈ بل

ہائی وے اتھارٹی ترمیمی بل

 

دو توجہ مبذول نوٹسز پر بحث کی جائے گی۔

تین پاور پلانٹس کے لیے 400 ارب کے قرض کا معاملہ اٹھایا جائے گا، سینیٹر سیف اللہ ابڑو اس معاملے کو اجاگر کریں گے۔

صدر ملک آصف علی زرداری کا خطاب بھی موضوع بحث ہو گا۔

 

7 جون کو چیئرمین سینیٹ یوسف رضا گیلانی کی زیر صدارت سینیٹ کے گزشتہ اجلاس میں سینیٹر پلوشہ خان کی بطور پریزائیڈنگ آفیسر تعیناتی پر تنازع کھڑا ہوا تھا۔ جس پر اپوزیشن ارکان نے ہنگامہ آرائی کی جس کے نتیجے میں اجلاس ملتوی کرنا پڑا۔ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی سینیٹر فوزیہ ارشد نے پلوشہ خان کی اجلاس کی صدارت کرنے پر اعتراض کرتے ہوئے

کہا کہ ڈپٹی چیئرمین موجود تھے اور ان کی بجائے صدارت کرنی چاہیے تھی۔

 

شیئر کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں